Posts

Showing posts from June, 2014

Misunderstood Concept of sin & forgiveness

رمضان اور تصورِ مذہب
رمضان کا آغاز ہو چکا۔اس کے مظاہر ہمیں مساجد میں نظر آئیں گے یا پھرکچوریوں اور سموسوں کے لیے، دکانوں کے سامنے لگی لمبی قطاروں میں۔اس کا ظہور ہو گا مگر صرف کلچر کی سطح پر۔روزے کا مقصود تقویٰ ہے۔ کیا تقویٰ یہی کچھ ہے؟
رمضان کی دستک سنائی دیتی ہے تو گرانی بازاروں کو اپنی گرفت میں لے لیتی ہے۔عام آ دمی اس طرف کا رخ کرتے ہوئے گھبرا تا ہے۔جیسے جیسے رمضان کے دن قریب آتے ہیں،کھانے پینے کی اشیاء عوام کی پہنچ سے دور بھاگنے لگتی ہیں۔قیمتیں جیسے آ سمان کو چھوناچاہتی ہیں۔جوتاجر اس کا ذمہ دار ہے، نماز ِ تراویح کے لیے سب سے پہلی صف میں بیٹھا ہو تا ہے۔مسجد کے لیے چندہ بھی وہی سب سے زیادہ دیتا ہے۔ مدارس اسی کے دم سے آ باد ہیں۔وہ جب مسجد سے نکلتا ہے تواس کا رخ دین سے دنیا کی طرف ہو تا ہے۔وہ دکان میں بیٹھتا ہے تو اس کی نظر صرف منافع پر ہو تی ہے۔اس کی خواہش ہوتی ہے کہ سال بھر کی آ مدن اس ایک مہینے میں ہو جا ئے۔کبھی آپ نے سوچا ایسا کیوں ہو تا ہے؟
اس کا تعلق ہمارے تصور مذہب سے ہے۔اہلِ مذہب نے اس تاجر کو کچھ مصدقہ کچھ غیر مصدقہ باتیںیاد کرا دی ہیں۔ان سے وہ یہ سیکھتاہے کہ نجات کے ل…

Imran Khan Speech Bahawalpur 27 June 2014 - Last Warning or Million March 14 August 2014

Image
Imran khan spech 1nby awaissamoo
Pakistan Tehreek-e-Insaf Chaimran Imran Khan announced at a rally in Bahawalpur on Friday evening that the time to open up investigations into vote rigging in the four constituencies is over, Express News reported on Friday. He warned that the government now had only one month to comply with his four demands otherwise there will be a tsunami march on August 14 in Islamabad. “The entire Pakistan knows that the general elections were rigged,” he boomed from the stage. Khan demanded that the ruling Pakistan Muslim League-Nawaz (PML-N) reveal declared themselves victorious at 11:20pm on the day of the elections when only 15% of the results had come. The PTI leader further demanded to know why there weren’t any returning officers under the election commission of Pakistan (ECP) and what the former Chief Justice Iftikhar Chaudhry was doing. He further demanded to know what the role of Pakistan Cricket Board Chairman Najam Sethi’s was during the elections. Poin…

Political stability & Pakistan

Image
حکومت کے لے اپنے پانچ سال مکمل کرنے ور مزید پانچ سال کے لے الیکشن جتنے کا آسان نسخہ : تمام مطالبات جو علامہ ڈاکٹر طاہر قادری ، عمران خان اور دوسرے حکومت مخالف لوگ پیش کر رہے ہیں ان میں زیادہ تر نوں لیگ کے منشور میں شامل ہینن . فوری طور پر ایک مشترکہ ٹاسک فورس بنیں جس میں سب کے نمیندے موجود ہوں ٣ ھفتوں میں عمل درآمد کے لے ایجنڈا بنا کر عمل شروع کر ڈائنن . سب انقلاب حکومت مخالف تحریکیں ختم ہو جائیں گی. مگر حکومت ایسا نہیں کرے گی کیونکے وہ جھوٹے ، دھوکہ باز ، لٹیرے ، ملک دشمن ، کرپٹ ، نہ اهل لوگ ہیں جن کو صرف اپنے کاروبار اور طاقت چاہیے . کیا ایسے لوگوں کو دھوکے ، فراڈ اور دہشت کے ذریے  خکومت کا حق ہے ؟  آپ ااٹھ کھڑے ہوں جس لیڈر کو اپ اچھا مخلص سمجھتے ہیں اس کا ساتھ دیں  ہم خیال لوگ آپس میں مخالفت میں اپنی طاقت خرچ نہ کریں . مشہور مقولہ یاد رکھیں: دوست کا دشمن دوست اور دشمن کا دوست دشمن ہوتا  ہے .  . اگر پرشر ، سیاسی . اخلاقی . قانونی دباؤ سے حکومت عوام دوست اقدام کرتی ہے تو آپ کامیاب ہو گئے . عوام کو کام سے مطلب ہے . ہم سب کی اس میں بہتری ہے .   ۗ إِنَّ اللَّـهَ لَا يُغَيِّرُ مَا بِقَوْمٍ حَت…

Revolution Pakistani style. ہمارے بھی انقلاب

ہمارے بھی انقلاب
نئی صدی میں انقلاب کا تحفہ قدرت کی مہربانیوں کی نشانی ہے۔ گزشتہ پوری صدی میں‘ اتنے انقلابات نہیں آئے‘ جتنے چودہ سال کے اندر پاکستان میں متعارف ہو چکے ہیں۔ ماضی میں دیکھیں تو گزشتہ پوری صدی کے انقلابات انگلیوں پر گنے جا سکتے ہیں‘ انقلاب روس‘ انقلاب چین۔ کچھ ننھے منے انقلاب‘ جیسے انقلاب ویت نام‘ انقلاب کیوبا۔ باقی ملکوں میں انقلاب انقلاب کھیلے ضرور گئے لیکن یہ سیاسی نابالغوں کا شوق تھا۔ جس جنرل نے اقتدار پر قبضہ کیا‘ اس نے اپنے فعل کو انقلاب قرار دے دیا۔ ایک انقلاب کرنل ناصر کا تھا‘ ایک صدام حسین کا‘ ایک کرنل قذافی کا‘ جو مائوزے تنگ کو اپنے سامنے طفل مکتب سمجھا کرتے تھے۔ مائو کی ریڈ بک کے مقابلے میں قذافی صاحب نے اپنی گرین بک شائع کی۔ وہ بڑے فخر سے لوگوں کو بتایا کرتے تھے کہ ''فلسفہ انقلاب پڑھنا ہو تو اس کتاب میں ملے گا‘‘۔ گزشتہ صدی میں پاکستان بھی انقلابات سے محروم نہیں رہا۔ یہاں جنرل ایوب خان نے آئین ختم کر کے‘ ایک انقلاب برپا کر دیا تھا۔ انہی کی زندگی میں ذوالفقار علی بھٹو نے اپنے انقلاب کا آغاز کیا اور آخر جیل میں بیٹھ کر لکھی گئی کتاب میں‘ اعتراف کیا کہ وہ …