Featured Post

Wake up Now ! جاگو ، جاگو ، جاگو

Wake up Pakistan ! Presently the Muslim societies are in a state of ideological confusion and flux. Materialism, terrorism,...

Wednesday, July 16, 2014

35 Punctures.. in Election 2013



انتخابی عمل میں خفیہ سکینڈل کا انکشاف
Photo
More details <<Click here>>
سوال یہ ہے کہ 11مئی 2013ء کے انتخابات سے پہلے 28اپریل 2013ء کو گزٹ نوٹی فیکیشن کا اجراء ہونے کے بعد ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسران نے 93حلقوں کی پولنگ سکیم 9یا 10مئی 2013ء کو کیسے تبدیل کر دی‘ جب کہ گزٹ نوٹی فکیشن کے اجراء کے بعد صرف الیکشن کمیشن آف پاکستان ہی تبدیلی کرنے کا مجاز ہے اوروہ سول سوسائٹیاں جو انتخابی عمل کا بغور جائزہ لیتی ہیں ان کی رپورٹ کے مطابق تبدیل شدہ پولنگ سکیم میں ہر حلقے میں 15سے 20ہزار ووٹوں کا فرق واضح نظر آتا ہے۔
24اکتوبر1990ء کے انتخابات کے انعقاد کے دوران سکھر کے حلقے سے انتخابات میں ناکام امیدواروں نے اس وقت کے الیکشن کمیشن آف پاکستان کے چیئرمین جسٹس نعیم احمد اور ارکان کمیشن جسٹس خلیل الرحمن اور جسٹس امیر الملک مینگل کے پاس عذرداری داخل کی کہ سکھر کے ڈسٹرکٹ سیشن جج رانا بھگوان داس نے پولنگ سٹیشن کی فہرست اور گزٹ نوٹی فیکیشن میں تبدیلی کی تھی۔ اس پر ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج رانا بھگوان داس کو الیکشن کمیشن آف پاکستان نے طلب کر کے وضاحت مانگی۔ اتفاق سے رانا بھگوان داس کی طلبی کا نوٹس میری ہی وساطت سے جاری کیا گیا تھا۔ میں ان دنوں ایڈیشنل الیکشن کمشنر سندھ تھا۔ الیکشن کمیشن آف پاکستان نے پورے ریکارڈ کی چھان بین کی۔ درخواست گزار کا موقف محض الزام تراشی پر مبنی پایا گیا۔ رانا
بھگوان داس نے پورا ریکارڈ کمیشن کے سامنے پیش کر دیا اور سکھر کے حلقے کے انتخابات گزٹ نوٹی فیکیشن کے عین مطابق پائے گئے۔ سماعت کے دوران عبدالحفیظ پیرزادہ، مرحوم سید اقبال حیدر، سید خورشید احمد شاہ اور رضا ربانی اور ان کے اس وقت کے مخالف امیدوار اسلام الدین شیخ اور دیگر سب موجود رہے‘ جب رانا بھگوان داس اپنی صفائی پیش کر رہے تھے۔ 
http://dunya.com.pk/index.php/author/kunwar-mohammad-dilshad/2014-07-17/7813/20074150#tab2
````````````````````````````````````````````````````````

تحریکِ انصاف نے دعویٰ کیا ہے کہ اس کے پاس 11مئی 2013ء کے انتخابات میں پنجاب کے 35 حلقوں میں دھاندلی کے حوالے سے خفیہ ریکارڈنگ موجود ہے۔ اس مبینہ ٹیپ میں ایک بڑی سیاسی جماعت کے رہنما اور ایک بڑے مغربی ملک کے سفارت کار کی خفیہ گفتگو شامل ہے جو کہ 11مئی کے انتخابات میں 35حلقوں میں دھاندلی کی طرف اشارہ کرتی ہے۔ ایک بڑے مغربی ملک کے سفارت کار نے‘ جن کا نام ظاہر نہیں کیا گیا‘ تصدیق کی ہے کہ ایک بڑی سیاسی جماعت کے رہنما کو 11مئی کے انتخابات کے نتائج آنے سے چند گھنٹے قبل خفیہ کوڈ کے ذریعے بتایا گیا تھا کہ پنجاب کے کم از کم 35حلقوں میں پولنگ اور ووٹوں کی گنتی کے عمل کے دوران بڑے پیمانے پر دھاندلی کے انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں۔ سیاسی میڈیا اور سفارتی حلقوں میں انتخابی نتائج کے حوالے سے بحث چل رہی ہے کہ 11مئی کے انتخابات کے نتائج میں شفافیت اور غیر جانبداری کا عمل متنازع تھا۔ عمران خان اپنے سوشل میڈیا کے ذریعے برملا کہہ رہے ہیں کہ ایک سیاسی جماعت کے قائد نے یقینا دھاندلی کرائی تھی ۔ وہ مزید کہتے ہیں کہ 35پنکچرز سے یہ بات سمجھنے میں بھی مدد ملے گی کہ عمران خان 11مئی کے انتخابات کے فوراً بعد پنجاب کے چار حلقوں میں ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا مطالبہ کرتے رہے اور انہوں نے سپریم کورٹ سے بھی از خود نوٹس لینے کا مطالبہ کیا تھا۔ لیکن ان کی خواہش کو مسترد کر دیا گیا۔ تحریکِ انصاف کی ترجمان اور رکن قومی اسمبلی شیریں مزاری نے بھی اعتراف کیا ہے کہ ایک مغربی ملک کے سفیر نے پنکچر کامطلب پوچھا تھا۔ سفارتی، میڈیا اور سیاسی حلقوں کے مطابق نگران حکومت کی اہم شخصیت نے الیکشن کی رات کو ایک سیاسی جماعت کے قائد کو فون کیا اور لاہوری زبان میں بتایا کہ 35پنکچر لگا دئیے گئے۔ یہ اہم شخصیت آل رائونڈر کے طور پر معروف ہے اور نواز شریف حکومت اب بھی اس اہم شخصیت کے سحر میںمبتلا ہے۔ ایک مبینہ آڈیو ٹیپ میں اس حوالے سے کچھ بات چیت موجود ہے جس کی بنیاد پر تحریکِ انصاف‘ پنجاب کے 35حلقوں میں دھاندلی کے الزامات عائد کر رہی ہے۔ دراصل تحریکِ انصاف اور پیپلز پارٹی نے 11مئی 2013ء کے انتخابات کو مانیٹرنگ کرنے کی منصوبہ بندی نہیں کی تھی۔ یہ دونوں پارٹیاں اندرونی طور پر خلفشار اور بدنظمی میں مبتلا رہیں۔ بہرحال اگر عمران خان کے ''35پنکچرز‘‘ کے الزامات درست ہیں تو انتخابات کرانے والی پنجاب کی نگران حکومت اور دیگر تمام متعلقہ اداروں کو تحقیقات میں شامل کیا جائے جس میں سابق چیف الیکشن کمشنر، ماتحت عدلیہ کے ریٹرننگ آفیسران ، وفاقی عبوری حکومتی سیٹ اَپ‘ ملکی اور غیر ملکی مبصرین شامل ہیں۔

تحریکِ انصاف نے انتخابی دھاندلیوں کے حوالہ سے الیکشن ٹربیونلز میں اپیلیں دائر کر رکھی ہیں جس میں ووٹرز کی تصدیق کا مطالبہ کیا گیا ہے ۔ 

اِسی تناظر میں عمران خان نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے معاملات چلانے کیلئے 11رکنی کمیٹی کی سربراہی کے لئے نجم سیٹھی کے تقرر کو عام انتخابات میں 35پنکچر یعنی 35حلقوں میں دھاندلی اورنتائج کی تبدیلی کا صلہ قرار دیا ہے۔ اگر عمران خان اپنے الزامات کو سپریم کورٹ میں ثابت کرنے میں کامیاب ہو جاتے ہیں تو پھر پنجاب کے سابق نگران وزیراعلیٰ‘ حلف کی خلاف ورزی کی زد میں آجائیں گے اور ان کے خلاف آئین کے آرٹیکل 6کے تحت کارروائی خارج امکان نہیں رہے گی۔ 

By Kunwsr Dilshad . Dunya.com.pk
Edited version
More: 
https://www.facebook.com/Rigging2013




  • 8PM with Fareeha idress, 10th December 2013 , Rigging in ...




    1. tune.pk/.../8pm-with-fareeha-idress-10th-december-20...
      Dec 10, 2013
      8PM with Fareeha idress, 10th December 2013 , Rigging inElection 2013 , Waqt News. Repeat. Jason Lee ...

  • Pakistan Elections 2013 Rigging Exposed | Tune.pk

    tune.pk/.../pakistan-elections-2013-rigging-exposed-

    Pakistan Elections 2013 Rigging Exposed. Repeat. myname. Subscribe 28. 304. Like this video. 0 0. About ...
  • Election 2013 Rigging | Tune.pk

    tune.pk/video/81222/election-2013-rigging

    http://www.yemtv.com - live news, recorded programs, breaking news, business news, politics news, sports ...



    1. Aitzaz Ahsan on Election Rigging | Tune.pk

      tune.pk/video/.../aitzaz-ahsan-on-election-rigging
      Rigging in General Election 2013 Pakistan - Proof of Election Rigging in NA-09 Mardan ... Rigging Pakistan ...