Featured Post

Wake up Now ! جاگو ، جاگو ، جاگو

Wake up Pakistan ! Presently the Muslim societies are in a state of ideological confusion and flux. Materialism, terrorism,...

Tuesday, August 28, 2012

Anti Islam Video from USA, Holocaust & Freedom of Speech


Video Response to the blasphemous Anti Islam Film>>http://lnkd.in/Cz4uyq


On the pretext of freedom of speech USA and West allows the extremists to insult Islam, Quran and Prophet Muhammad [peace be upon him]. They are well aware that this will hurt the feelings of 1.5 billion Muslims, the world over who can not bear any non sense on the pretext of freedom of speech. On the other side In … Continue reading »
میرا درد اور تکلیف ناقابل بیاں تھی۔ یہ تکلیف میری صحافیانہ جستجو کا نتیجہ تھی۔ میں نے سی این این پر ایک اسلام مخالف فلم کے خلاف لیبیا میں احتجاجی مظاہروں کی خبر دیکھی تو انٹرنیٹ پر اس فلم کو تلاش کرنا شروع کیا۔ ایک ساتھی نے فلم کو کسی ویب سائٹ سے ڈاؤن لوڈ کرکے میری مشکل کو آسان کردیا لیکن جیسے ہی میں نے فلم دیکھنی شروع کی تو مجھے ایسے لگا کہ کسی نے میرے دل و دماغ پر ہتھوڑے برسانے شروع کردئیے ہیں۔ میں خود کو بہت مضبوط اعصاب کا مالک سمجھتا ہوں لیکن سام بیسائل کی طرف سے”مسلمانوں کی مظلومیت“ کے نام سے بنائی گئی یہ فلم اس دور کی سب سے بڑی دہشتگردی تھی کیونکہ اس فلم کے مناظر اور ڈائیلاگ مسلسل بم دھماکوں سے کم نہ تھے۔ گیارہ ستمبر2001ء کو نیویارک اور واشنگٹن میں القاعدہ کے حملوں سے تین ہزار امریکی مارے گئے تھے لیکن گیارہ ستمبر2012ء کو یو ٹیوب پر جاری کی جانے والی اس فلم نے کروڑوں مسلمانوں کی روح کو زخمی کیا۔ میں اس فلم کو چند منٹ سے زیادہ نہیں دیکھ سکا۔ اس خوفناک فلم کی تفصیل کو بیان کرنا بھی میرے لئے بہت تکلیف دہ ہے۔ بس یہ کہوں گا کہ اس فلم کے چند مناظر دیکھ کر سام بیسائل کے مقابلے پر اسامہ بن لادن بہت چھوٹا سا انتہا پسند محسوس ہوا۔ یہ اعزاز اب امریکہ کے پاس ہے کہ اس صدی کا سب سے بڑا دہشتگرد سام بیسائل اپنی انتہائی گندی اور بدبو دار ذہنیت کے ساتھ صدر اوباما کی پناہ میں ہے۔ اللہ تعالیٰ کا لاکھ لاکھ شکر ہے کہ آج تک کبھی کسی مسلمان نے حضرت عیسیٰ  یا کسی دوسرے نبی کی شان میں گستاخی نہیں کی ۔ امریکہ کی طرف سے ہمارے دینی مدارس پر بہت اعتراضات کئے جاتے ہیں کہیں ان دینی مدارس کے طلبہ نے کبھی مسیحی یا یہودی مذاہب کی ایسی توہین کے بارے میں سوچا بھی نہ ہوگا جو سام بیسائل نے مسلمانوں اور ان کے پیارے نبی حضرت ﷺ کی۔ مجھے افسوس ہے کہ امریکی صدر اوباما کی طرف سے اس فلم کے خلاف آنے والا ردعمل برائے نام ہے۔ اس فلم کو امریکی اقدار کے خلاف قرار دینا کافی نہیں بلکہ یہ اعتراف کرنا بھی ضروری ہے کہ کچھ مسیحی اور یہودی انتہا پسند ریاست ہائے متحدہ امریکہ کو مسلمانوں کے خلاف ایک بیس کیمپ کے طور پر استعمال کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ یہ انتہا پسند القاعدہ، طالبان اور حقانی نیٹ ورک سے زیادہ خطرناک ہیں۔ میں صدر اوباما سے سام بیسائل اور ٹیری جونز جیسے دہشتگردوں کے خلاف کارروائی کی بھیک نہیں مانگوں گا لیکن امریکی میڈیا میں ا پنے دوستوں سے گزارش کروں گا کہ وہ یہ پتہ ضرور لگائیں کہ ان کے ہم وطن دہشتگردوں کو امریکہ کے کون کون سے خفیہ ادارے کی حمایت حاصل ہے۔ یقینا ٹیری جونز اور سام بیسائل پورے امریکہ کے ترجمان نہیں اور آج امریکہ میں رمزے کلارک جیسے بزرگ بھی موجود ہیں جو ایک پاکستانی خاتون ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی رہائی کا مطالبہ کررہے ہیں لیکن مجھے ایسے لگتا ہے کہ آج عالم اسلام میں امریکہ کی پہچان رمزے کلارک نہیں بلکہ سام بیسائل بن چکا ہے۔
سام بیسائل کی دہشتگردی نے مجھے صلاح الدین ایوبی کی یاد دلائی جس نے ایک مسیحی بادشاہ کی طرف سے مسلمانوں کے پیارے نبی حضرت محمد اکرم کی شان میں گستاخی پر غضبناک ہو کر تلوار اٹھالی تھی اور آخر کار بیت المقدس کو فتح کرکے دم لیا تھا۔ افسوس کہ آج عالم اسلام کے کسی حکمران میں اتنا دم نہیں کہ وہ آئے روز توہین رسالت اور توہین قرآن کرنے والوں کے عالمی سرپرستوں کو للکار سکے۔ ہمارے ریاستی ادارے توہین رسالت اور توہین قرآن کے جھوٹے الزامات میں اپنے ہم وطن غریب غیر مسلموں کو گرفتار کرنے میں کوئی دیر نہیں لگاتے لیکن جب امریکی فوجی گوانتاناموبے یا قندھار میں قرآن کی توہین کرتے ہیں جب ٹیری جونز الاعلان قرآ ن پاک کو نذر آتش کرتا ہے اور جب سام بیسائل ایک فلم کے ذریعہ ہماری روح کو لہولہان کردیتا ہے تو ہم اور ہمارے حکمران محض زبانی کلامی مذمت کو کافی سمجھتے ہیں اگر لیبیا یا یمن میں امریکی سفارتخانے پر حملہ ہوجائے تو امریکہ وہاں فوج بھیجنے کی دھمکی دے سکتا ہے لیکن ہم آجاکر اپنی ہی سڑکوں پر اپنی ہی املاک کی توڑ پھوڑ کے سوا کچھ نہیں کرسکتے۔
ہمیں اعتراف کرنا چاہئے کہ آج ہم صلاح الدین ایوبی کو یاد تو کرسکتے ہیں لیکن صلاح الدین ایوبی بننے کی سکت نہیں رکھتے۔ صلاح الدین ایوبی ایک کرد تھا لیکن اس نے ا پنی ہمت و شجاعت سے ایک ایسی فوج کی قیادت کی جس میں عرب، ترک اورکردوں سمیت کئی زبانیں بولنے والے مسلمان شامل تھے۔اس فوج کے پاس سب سے بڑی طاقت جذبہ ایمانی تھی اور اس جذبہ ایمانی کو ختم کرنے کے لئے دشمن نے مسلمانوں میں لسانی، نسلی اور فرقہ وارانہ اختلافات کوفروغ دیا۔ کون نہیں جانتا کہ برطانوی فوج کے افسر کرنل لارنس نے مسلمانوں کا اتحاد توڑنے کے لئے ان میں قومیت پرستی کا جذبہ ابھارا اور عربوں کو ترکوں سے لڑا دیا۔ آج ہمارے پاس ایٹمی طاقت موجود ہے لیکن جذبہ ایمانی مفقود ہے۔ ہمارے اندرونی حالات نے ہمارے ایٹم بم کو بھی ا یک مذاق بنادیا ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ ہم نے ایٹم بم اپنے بچاؤ کے لئے نہیں بنایا بلکہ ہم ہر وقت ایٹم بم کو دشمن سے بچائے پھرتے ہیں۔ ہماری بے بسی کا عالم یہ ہے کہ ہم اپنے دشمنوں کو خوش کرنے کے لئے ایک دوسرے پر گولیاں چلاتے ہیں اور ایک دوسرے کو اغواء کرتے ہیں، پھر اس قتل و غارت اور اغواء کاری کی تحقیقات کا تقاضا بھی دشمن سے کرتے ہیں۔
سوچنے کی بات یہ ہے کہ ہمارا قانون ہمیں تحفظ نہیں دے سکتا، ہم ایک دوسرے کو تحفظ نہیں دے سکتے تو ہم اپنے پیارے نبی حضرت محمد مصطفی ﷺ کی ناموس کی حفاظت کیسے کرسکتے ہیں؟ میری اطلاع کے مطابق امریکہ اور ہالینڈ میں دو ایسی فلمیں بنائی جارہی ہیں جن میں مسلمانوں کے شیعہ سنی اختلافات کو بڑھا چڑھا کر پیش کیا جائے گا۔ اس میں سے ایک فلم ایران کے خلاف ہے جس کا مقصد شیعہ سنی اختلافات کے علاوہ ایرانیوں اور عربوں کے نسلی اختلافات کو اچھالنا ہے۔ دوسری فلم شام کے شیعہ سنی اختلافات کے متعلق ہے۔ ایک مغربی ٹی وی چینل کی طرف سے بلوچستان کے حالات پر ڈاکو منٹری فلم بنائی جارہی ہے جس میں بلوچوں اور پشتونوں کے اختلافات کو ابھارنے کی کوشش کی جائے گی۔ بلوچستان میں بلوچ ، پشتون، ہزارہ اور پنجابیوں سمیت ہندو برادری کو کون کیسے ایک دوسرے سے لڑا رہا ہے اس پر کسی اگلے کالم میں بات ہوگی فی الحال صرف یہ کہنا ہے کہ ایک نبی ماننے والو ہوش کے ناخن لو۔ نہ پشتون کسی بلوچ کا دشمن ہے نہ بلوچ کسی ہزارہ کا دشمن ہے نہ سندھی کسی مہاجر کا دشمن ہے بلکہ سب صرف مسلمان ہیں اور ہمارا اصل دشمن وہ ہے جو ہمارے نبی کی شان میں گستاخی کررہا ہے۔ دشمن ہمیں آپس میں لڑارہا ہے ،ہمیں مارتا بھی ہے اور ایک دوسرے کے ہاتھوں مرواتا بھی ہے اس مشترکہ دشمن کے خلاف متحد ہوجاؤ!
لیبیا میں اِسلام مخالف فلم کیخلاف احتجاج کرنیوالوں کے ہاتھوں امریکی سفیر کی ہلاکت پر اقوام متحدہ اور غیرمسلم ممالک کے ساتھ ساتھ مسلمان ممالک بشمول پاکستان نے فوری مذمتی بیانات جاری کئے مگر کسی ایک اسلامی ملک نے بھی ...
 http://dunya.com.pk/?key=VjFjeE1HTXhTbGRSYkZaVFZrWmFURmxzVlRGaU1YQkdXa1prVkdKRmNFWlVWbVIzWVZVeGRWb3phRnBpUlRWb1dWY3hTMUl3T1ZsUmJVWlRVa1ZKTVZaR1dsTlZNWEJ5VGxoR1ZWWkZjRTlXYTFweVpERlJlRlZzY0d0V01Gb3hWVmN3TUZCUlBUMD0=
Visit: http://freebookpark.blogspot.com

Wednesday, August 22, 2012

Destruction of Schools by Khwarij Taliban, Enemies of Islam

إِنَّ شَرَّ الدَّوَابِّ عِندَ اللَّـهِ الصُّمُّ الْبُكْمُ الَّذِينَ لَا يَعْقِلُونَ
“Verily, the vilest of all creatures in the sight of God are those deaf, those dumb ones who do not use their intellect.” (Quran; 8:22)
Khwarij Taliban, during last 5 years have destroyed around 500 schools in tribal areas of Pakistan, we do not need any more enemies, they are the real enemies of Islam & Muslims. Other nations are conquering planets like Mars, they are trying to keep us in the shekels of ignorance جہالت.
 وَمَا كَانَ الْمُؤْمِنُونَ لِيَنفِرُوا كَافَّةً ۚ فَلَوْلَا نَفَرَ مِن كُلِّ فِرْقَةٍ مِّنْهُمْ طَائِفَةٌ لِّيَتَفَقَّهُوا فِي الدِّينِ وَلِيُنذِرُوا قَوْمَهُمْ إِذَا رَجَعُوا إِلَيْهِمْ لَعَلَّهُمْ يَحْذَرُونَ
"When the believers mobilize, not all of them shall do so. A few from each group shall mobilize by devoting their time to studying the religion. Thus, they can pass the knowledge on to their people when they return, that they may remain religiously informed."[Quran 9:122]
Islam is NOT religion of RITUALS only, Islam is complete way of life, including all aspects of economy, business, social behaviour, medicine, science and anything related with success in the life here and hereafter. Hence acquiring knowledge of Din or region of Islam covers all types of knowledge, this is evident from following verses  and Ahadiths which indicate that Allah and his Prophet [pbuh] wants the Muslims to acquire not only religious knowledge but  also the other knowledge like history, science and any knowledge which is beneficial:
'Say: Are those who know equal to those who know not? It is only men of understanding who will remember''. [39:9]
''Now such were their houses in utter ruin because they practiced wrongdoing. Verily in this is a SIGN FOR PEOPLE OF KNOWLEDGE''. [27:52]
''And such are the Parables We set for mankind but none will understand them except those who have Knowledge[29:43]
''Those truly fear Allah among His Servants who HAVE KNOWLEDGE: for Allah is Exalted in Might Oft-Forgiving''. [35:28]
''High above all is Allah the King, the Truth! Be not in haste with the Qur'an before its revelation to thee is completed but say "O my Lord! INCREASE ME IN KNOWLEDGE." [20:114]
The seeking of knowledge is obligatory for every Muslim (Al-Tirmidhi Hadith 218)
The prophet (PBUH) used to supplicate: "O Allah, I seek refuge in Thee from four things: KNOWLEDGE WHICH DOES NOT PROFIT, a heart which is not submissive, a soul which has an insatiable appetite, and a supplication which is not heard." (Sunan of Abu-Dawood hadith 1543)
O Allah, I ask Thee for BENEFICIAL KNOWLEDGE, acceptable action, and good provision." (Al-Tirmidhi Hadith Hadith 2487).
Does it mean that every individual Muslim must also become a religious scholar? Not at all. What is required of an individual is only sufficient knowledge that can enable him or her to carry out their religious obligations. As a minimum every Muslim must learn the articles of faith and what they really mean. He or she must also learn the laws and teachings of Shariah as they relate to their life. The basic rule is that accompanying every religious duty is another duty to learn about the requirements of that duty. Thus it is our duty to learn Shariah teachings about Salat, Fasting, Hajj, and Zakat. For a businessman, it is a religious duty to learn Islam's teachings about economics and halal and haram transactions. For a person getting ready to get married, it is a religious duty to learn Islamic teachings about marriage and spousal rights and responsibilities.  And so on for every Muslim it is his duty to learn about his profession to practice it according to tenants of Islam. 
Abu ad-Darda (may Allah be pleased him) reported: “I heard the Messenger of Allah (peace be on him) say: ‘Whoever treads a path due to which he seeks knowledge, Allah will make him tread one of the paths towards Paradise. And the angels lower their wings out of contentment for the seeker of knowledge. And verily all those in the heavens and in the earth, even the fish in the depths of the sea ask forgiveness for the scholar. And verily, the virtue of the scholar over the worshipper is like the virtue of the moon on the night of the full moon Al-Badr over all of the stars. Indeed, the scholars are the inheritors of the prophets, for the prophets do not leave behind a dinar or a dirham for inheritance, but rather, they leave behind knowledge. So whoever takes hold of it, has acquired a large share (i.e. of inheritance).’” (Abu Dawud, Sunan, hadith no. 3641)
پاکستان کے قبائلی علاقوں میں حکام کے مطابق گزشتہ پانچ برس کے دوران پانچ سو کے قریب تعلیمی ادارے شدت پسندی کے کارروائیوں میں تباہ ہو چکے ہیں جس کی وجہ سے پانچ لاکھ سے زیادہ بچے تعلیم کے حصول سے محروم ہوگئے ہیں۔ بی بی سی کی خصوصی رپورٹ۔
پاکستان کے قبائلی علاقوں میں حکام کے مطابق گزشتہ پانچ برس کے دوران پانچ سو کے قریب تعلیمی ادارے شدت پسندی کے کارروائیوں میں تباہ ہو چکے ہیں جس کی وجہ سے پانچ لاکھ سے زیادہ بچے تعلیم کے حصول سے محروم ہوگئے ہیں۔
محکمہ تعلیم فاٹا کے ڈپٹی ڈائریکٹر ہاشم خان آفریدی نے بی بی سی کو بتایا کہ قبائلی علاقوں میں جاری شدت پسندی کی کارروائیوں کے دوران اب تک چار سو پچاسی تعلیمی ادارے تباہ ہو چکے ہیں۔ ان میں کالج، ہائیر سیکنڈری سکول، ہائی سکول، مڈل اور پرائمری سکول شامل ہیں۔
انہوں نے کہا کہ ان سکولوں کے تباہ ہونے کی وجہ سے تقریباً پانچ لاکھ بچوں کا تعلیمی سلسلہ بُری طرح متاثر ہوا ہے۔ لیکن بعض تباہ ہونے والے سکولوں کے لیے متبادل مقامات کا بندوبست کیاگیا ہے اور کچھ سکولوں کے لیے خیمے دیے گئے ہیں۔ جبکہ زیادہ تر سکول مقامی رہائشیوں کے گھروں اور حجروں میں منتقل کیےگئے ہیں۔ بعض جگہوں پر تناور درختوں کے نیچے تعلیمی سلسلہ جاری رکھا گیا ہے۔
اہلکار کے مطابق ان متبادل مقامات پر شروع کیے جانے والے سکولوں کی تعداد ایک سو سے زائد ہے۔ ان سکولوں پر خرچے کے لیے سعودی عرب اور عرب امارات کا تعاون حاصل ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان کوششوں سے تقریباً پچاس فیصد بچوں کا تعلیمی سلسلہ بحال کر دیاگیا ہے لیکن پھر بھی پچاس فیصد بچے مکمل طور پر تعلیم کی حصول سے محروم ہوچکے ہیں۔

اہلکار کے مطابق گھروں میں تنخواہ لینے والے اساتذہ ڈیوٹیوں سے انکاری نہیں ہیں لیکن ان کے سکول تباہ ہوچکے ہیں۔ جب یہ سکول دوبارہ تعمیر ہو جائیں گے تو تمام اساتذہ بھی اپنے ڈیوٹی پر حاضر ہو جائیں گے۔
ان کا کہنا تھا کہ تباہ شدہ سکولوں کی یہ تعداد صرف سرکاری تعلیمی اداروں کی ہے جبکہ پرائیوٹ تعلیمی اداروں کی تعداد اس کے علاوہ ہے۔
سرکاری تعلیمی ادارے تباہ ہونے کی وجہ سے اکثر بچے اس لیے محنت مزدوری کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں کیونکہ ایک طرف گھر کے اخراجات پورے کرنے ہیں اور دوسری طرف پرائیوٹ سکولوں میں فیس ادا کرنی پڑتی ہے۔
درویش خان خیبر ایجنسی کی تحصیل باڑہ میں کوہی شیر حیدر انٹر کالج میں سیکنڈ ائیر کے طالب علم تھے۔ دو سال پہلے ان کے کالج کو دھماکے سے تباہ کر دیا گیا تھا جس کے بعد ان کا کالج بھی بند ہوگیا ہے۔ ان کا تعلیمی سلسلہ منقطع ہوگیا ہے اور وہ کارخانوں مارکیٹ میں ایک ورکشاپ میں کام کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔
درویش خان کا کہنا ہے کہ کالج میں ان کے اکتالیس کلاس فیلو تھے اور کالج کے اساتذہ میں سے اکثر پشاور کے بندوبستی علاقوں سے تعلق رکھتے تھے۔
انہوں نے کہا کہ دو سال پہلے باڑہ میں فوجی آپریشن کے دوران ان کے کالج میں رات کے وقت نامعلوم افراد نے بم دھماکے کیے جس سے کالج کا ایک حصہ مکمل طور پر تباہ ہوگیا۔ انہوں نے بتایا کہ ان دھماکوں کے بعد باہر سے آنے والے اساتذہ نے خوف کی وجہ سے کالج آنا چھوڑ دیا اور آہستہ آہستہ کالج مکمل طور پر بند ہوگیا۔
درویش خان کا کہنا تھا کہ ان کے کلاس فیلوز میں سے پانچ ایسے تھے جن کی معاشی حالت کچھ بہتر تھی اور انہوں نے پشاور کے دوسرے کالجوں میں داخلہ لے لیا۔ اور باقی چھتیس طلب علم خیبر ایجنسی اور پشاور کے مختلف علاقوں میں محنت مزدوری کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔
"
کلاس فیلوز میں سے پانچ ایسے تھے جن کی معاشی حالت کچھ بہتر تھی اور انہوں نے پشاور کے دوسرے کالجوں میں داخلہ لے لیا۔ اور باقی چھتیس طلب علم خیبر ایجنسی اور پشاور کے مختلف علاقوں میں محنت مزدوری کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں"
درویش خان

انہوں نے بتایا کہ باڑہ کالج ان کے گھر کے قریب تھا اور وہ پیدل کالج جاتے تھے جس وجہ سے ان کا ایک روپے کا خرچہ بھی نہیں ہوتا تھا۔ اب اگر وہ کسی دوسرے کالج میں داخلہ لے سکے تو ان کے آنے جانے کا خرچہ صرف پانچ سو روپے روزانہ کے حساب سے بنتا ہے جو ان کے لیے ناممکن ہے۔
مہمند ایجنسی تحصیل صافی کے علاقے کندارو کے رہائشی ظاہر شاہ نے بتایا کہ مہمند ایجنسی میں سب سے زیادہ سکول تحصیل صافی میں تباہ ہوئے ہیں جس کی وجہ سے ہزاروں بچے تعلیم سے محروم ہوگئے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ ان کے گاؤں میں ایک سرکاری ہائی سکول ہے جس میں پورےگاؤں کے لڑکے تعلیم حاصل کر رہے تھے لیکن یہ سکول دسمبر دو ہزار اٹھ میں سکیورٹی فورسز کی بمباری میں اس وقت تباہ ہوا جب سکیورٹی فورسز اور شدت پسندوں کے درمیان ہونے والی لڑائی کے دوران شدت پسندوں نے سکول میں ٹھکانہ بنا رکھا تھا۔
ظاہر شاہ کے مطابق سکول میں اب بھی کلاسیں چل رہی ہیں۔ لیکن اس کی عمارت ابھی تک ایک ملبے کا ڈھیر ہے۔ جبکہ بچے کُھلے آسمان تلے پڑھنے پر مجبور ہیں۔
انہوں نے کہا کہ ان کا بھتیجا یسین خان اٹھویں کلاس میں اسی سکول میں پڑھ رہا تھا لیکن سکول تباہ ہونے کی وجہ سے ان کا تعلیمی سلسلہ منعقطع ہوگیا ہے۔ تاہم اس سال انہوں نے میٹرک کا امتحان پرائیوٹ طور پر دیا لیکن ان کی پوزیشن اچھی نہیں تھی۔
اگر ایک طرف لاکھوں قبائلی متاثرین اپنے گھروں سے دور روزگار کی تلاش میں در بدر ٹھوکریں کھا رہے ہیں تو دوسری طرف ان قبائلیوں کے آنے والی نسلوں کو تعیلم کی سہولت حاصل نہیں ہے۔ یہ حکومت کے لیے ایک بُہت بڑا http://www.bbc.co.uk/urdu/pakistan/2012/08/120821_fata_school_special_rh.shtmlچلینج ہے۔
Muslims need to do their best to understand Islam according to the Qu'ran and the Sunnah of Prophet Muhammad (PBUH) now more than before because there are many new and strange beliefs and practices causing disunity among the Muslims. Faith is very important, our faith has to conform with the Qur'an and the Sunnah because our solat, righteous deeds and all acts of worship will not be accepted if our faith and Islamic aqidah are deficient.
Islam emphasizes the importance of knowledge both religious and mundane. Islam is a justly balanced religion (Quran 2:143). It does not forbid us from seeking the good things of this world (including but not limited to sound western education or any other useful knowledge) because we want Paradise but it advises us not to let the search for good things of the world be our main pursuit in this world.  Allah Himself commands us to pray: "Our Lord! Give us good in this world and good in the Hereafter and defend us from the torment on the fire!" [Quran;2:201]
The first generation of Muslims demonstrated their good understanding of Islam, they were pious men and they contributed to scientific discoveries and other sphere of knowledge. But only few Muslims of the present generation do this. It is either he/she is a professor in his/her field and knows next to nothing about Islam or he is an Islamic Scholar with little or no knowledge about other fields of knowledge. 
Without knowledge of modern science and technology Muslims will lag behind and continue to be slaves of West and their market. Those who are destroying schools are enemies of Islam and Muslims helping the West and USA to keep Muslims as slaves.
إِنَّ شَرَّ الدَّوَابِّ عِندَ اللَّـهِ الصُّمُّ الْبُكْمُ الَّذِينَ لَا يَعْقِلُونَ
“Verily, the vilest of all creatures in the sight of God are those deaf, those dumb ones who do not use their intellect.” (Quran; 8:22)
Related topics:

Visit: http://freebookpark.blogspot.com

Tuesday, August 14, 2012

Happy Independence Day

“If India is granted freedom, power will go to the hands of rascals, rogues, freebooters; all leaders will be of low caliber and men of straw. They will have sweet tongues and silly hearts. They will fight amongst themselves for power and India will be lost in political squabbles. A day would come when even air and water will be taxed.” 
Winston Churchill wrote these words 65 years ago and we Pakistanis have certainly worked very hard all this time to prove him right.
HAPPY INDEPENDENCE DAY



Wednesday, August 8, 2012

Why the existence of Pakistan is not in India’s interest


Pakistan has been a thorn in India’s left side for 65 years, and amazingly, India has tolerated its pain and irritation, against most odds of human nature.  After four wars and multiple proxy wars waged by Pakistan, it still doesn’t count as much for India – a big elephant that is difficult to move.  India’s Pakistan policy practices restraint and constraint against an enemy that hates it, that was born in conflict against India in brutal bloodshed, and even now hopes one day to overcome a weak India.


Visit: http://freebookpark.blogspot.com

Why Excessive Load Shedding & Power Riots in Punjab?




 اصل مسئلہ لوڈ شيڈنگ کا ہے اور وہ جوں کا توں رہے گا جب تک کچھ سخت فيصلے نہ کئے جائيں ?سب سے پہلے تو ہميں بجلي کے قومي ٹيرف کي بجائے علاقائي ٹيرف کو لاگو کرنا ہوگا?سادہ زبان ميں اس کا مطلب ہے کہ جو علاقہ جتني بجلي چوري کرے گا وہاں اتني ہي زيادہ لوڈ شيڈنگ ہو گي اور وہاں بجلي بھي اسي مناسبت سے مہنگي ہو گي?مثلاً اگر حيدر آباد ميں 30فيصد بجلي چوري ہوتي ہے يا اس کا بل ادا نہيں کيا جاتا تو اس 30فيصد چوري کي ريکوري بھي اسي شہر کے باسيوں سے کي جائے نہ کہ اس شہر سے جو 99فيصد بل ادا کرتا ہے ?طريقہ اس کا نہايت آسان ہے?بجلي چور شہر کا ٹيرف الگ ہواور وہاں بجلي اسي مناسبت سے مہنگي ہو جتني چوري ہوتي ہے ?اسي طرح شہر ميں لوڈ شيڈنگ کا تناسب بھي بجلي چوري کے حساب سے ہو?اس وقت بجلي چوري اور نا دہندگان کے خلاف ملک ميں کوئي پريشر گروپ نہيں ہے،يہ پاليسي نافظ کرنے سے بجلي چوري کے خلاف پريشر گروپ خود بخود وجود ميں آ جائيں گے اور لوڈ شيڈنگ ڈرامائي حد تک کم ہو جائے گي?
The Punjab government blames the federal government’s revengeful bias for what has happened. Power generation has dropped to a paltry 9,400MW against the total demand of 17,400MW in the country. But out of the 9,400MW, 600MW was diverted to the Karachi Electricity Supply Company (KESC). Line losses accounted for another 600MW that didn’t come to Punjab and there was understandable favour shown to the industrial sector & Karachi where loadshedding is much less.
Punjab is the biggest province but it is also the most at peace with itself. Line losses and non-payment of bills are the least here. 
According to estimates of NTDC, amount of more than Rs 39 billion is due on Sindh province, Rs 18 billion towards Balochistan, Rs 5 billion Punjab, Rs 10 billion Azad Jammu and Kashmir (AJK) and Rs 16 billion Khyber Pakhtunkhwa province against electricity billing. So in reward punish Punjab with extra load shedding.


10 crore people of Punjab are suffering with hourly loading in Lahore and more in other cities while there is minimal load shedding in Karachi. They are our brothers, nothing against them.. but 
WHY THIS INEQUALITY?   Is it fair? 
The government of Zardari, Raja & Co cannot be expected to do any good works, because their motto is : DEMOCRACY IS THE BEST REVENGE.
Power crisis is self created due to incompetence, corruption and negative attitude of ruling elite.

There are  ADs on TV with the message "Development of Sindh is Development for Pakistan". The indirect message is ALL OTHERS TO GO TO HELL!

Chief Minister of Punjab is running Tent Offices in protest, WHY cant't HE use the available governmental 
channels and forums to resolve the issue?
Protest is the option of common / helpless people. 
WHY CM PUNJAB IS HELPLESS? People like me voted for them to govern and resolve the problems, if he cannot do his duty he should quit !!!!! Let some one else to do the  job.... mere honesty and cosmetic media measures, shedding crocodile tears is not the job of LEADER. CM repeatedly claims that  Punjab is deprived of 700 megawatts of its genuine share to others [Sindh], in last 4 years Punjab besides suffering loss of billions, many factories closed down, creating joblessness and social, law and order problems. 

If the official channels fail to resolve the issue, The  CM Punjab should go to Supreme Court to get justice for 10 crore people of Punjab.

Or may we appeal to Honourable CJ to take sou-motto action, because our elected leaders have failed to resolve people's problems. Lahore JAP has already gone ot Lahore High Court http://dawn.com/2012/07/29/outages-at-sehr-iftar-challenged/

[Good news JAP has achieved what CM Punjab could not ..... LAHORE: July 30 2012, The Lahore High Court (LHC) has ordered to carry out uniform loadshedding in all four provinces, Geo News reported on Monday. The court was hearing a petition filed by Advocate Azhar Siddique against loadshedding during Sehri and Iftaar. During the hearing, Chief Justice LHC Umar Ata Bandial remarked that no discrimination should be done on the issue of loadshedding and ruled that it should be carried out on a uniform basis across the country. The Chief Justice LHC also referred to some newspaper stories regarding less loadshedding being carried out in areas where the prime minister and other ministers reside. The court, moreover, issued notices to the federal government, Lahore Electric Supply Company (LESCO) and other concerned authorities for August 7. http://www.thenews.com.pk/article-61245-LHC-orders-uniform-loadsheddingShame on you CM Punjab, Zardari & Co  .... Courts Zindabad, 



PML N critics talk of its secret deal with Zardari to remain in power in Punjab even with lack of majority.

The rights of people of Punjab sacrificed for politics by accepting priority in CNG /Sui gas to others. While there is one day CNG break in other places its for 3 days in Punjab. 

Provincialism is rejected, Karachiates are our brothers, we are all Pakistanis, every one should be given fair and equal treatment, we should all share the  burden  equally.

RAISE YOUR VOICE IN PROTEST PASS ON ... SILENCE IS CRIME...


The domestic consumers can not afford to delay electric bill, connection is disconnected instantly, but corrupt industrialists and government departments do not pay electric bills in billions. The Ministry of Water and Power and its subordinate institution have failed to maintain the huge volume of circular debt of Rs 783 billion and as a result power shortfall has increased up to 4,870 megawatts (MW), following once again prolonged hours of scheduled and unscheduled power load shedding across the country.

Sources in the Ministry of Water and Power revealed that because of non-recoveries from electricity consumers including provincial and federal governments, volume of circular debt has increased up to Rs 783 billion, including receivables of Rs 383 billion and Rs 400 billion as payable in their accounts.
PSO’s receivable from power sector including Water and Power Development Authority rose by Rs 56.123 billion, Hubco by Rs 107.179 billion and Kot Addu Power Company by Rs 31.483 billion, while Rs 6.561 billion is due on KESC till date.
Because of non-payment to fuel supply companies, the power generation of thermal power plant has been generating lower than the installed generation capacity due to non-availability of required volume of fuel.

Another reason for prolonged load shedding once again across the country, which has been observed, is long delays in payment to refineries by fuel supply companies.

PSO’s total payable to local refineries has crossed Rs 85.055 billion mark at present, payables to local refineries include Rs 24.939 billion to Pak-Arab Refinery Limited, Rs 16.060 billion to Pakistan Refinery Limited, Rs 9.53 billion to National Refinery Limited, Rs 31.708 billion to Attock Oil Refinery Limited, Rs 2.606 billion to Bosicor and Rs 389 million to others.

Electricity Power Crisis, Real or Created? Facts and Fiction
Producers (IPPs) and Pakistan Atomic Energy Commission ... Koh-e-Noor Energy Ltd, Lahore &n bsp; 131 MW ... Tapal Energy Limited, Karachi &n bsp; 126 MW ... But due to this fact all our industries are under severe crisis.
Why the PPP & PML-N are Politically ...
The dilemmas of PPP and PML-N politics are even more alarming at another level: both the leaderships are family-based and increasingly ancestral-focused: both have been accused of and charged with massive corruption ...
Power riots in Punjab – The Express Tribune
tribune.com.pk/story/395433/power-riots-in-punjab-2/Share
18 Jun 2012 – 18 Jun 2012Loadshedding outrage: Power protests spill onto highways, disrupt traffic; 17 Jun 2012As loadshedding riots continue, Zardari takes notice ...Pakistan govt. is Bankrupt, it neither collects taxes optimally, nor does it ...

An official source said that interest was recently expressed by the Japan International Cooperation Agency (JICA) in a meeting with the officials of the Thar Coal and Energy Board (TCEB). JICA asked TCEB officials to ...
Shedding crocodile tears: Outages at Sehr, Iftar reflect criminal negligence: Shahbaz: Lahore: Punjab Chief Minister Muhammad Shahbaz Sharif on Wednesday said that worst loadshedding at the time of Sehr, Iftar and Taraveeh was reflective of criminal negligence of the federal government and incompetence of Zardari gang. The CM ...Full Story

Mismanagement, financial woes worsen power crisis

Soaring circular debt of power sector is more than Rs450 billion, which ... to power sector from thePSO by unanimously saying that fuel supply ...
پنجاب کے ساتھ زيادتي صدر زرداري کي وجہ سے ہو رہي ہے،شہباز شريف 


Visit: http://freebookpark.blogspot.com


Tuesday, August 7, 2012

Genocide of Muslims in Myanmar , Burma


According to Amnesty International, the Muslim Rohingya people have continued to suffer from human rights violations under the Burmese junta since 1978, and many have fled to neighbouring Bangladesh as a result. the Buddhists extremists had been carrying out massacre of the Muslims in minority and were setting their homes and colonies ablaze under the government patronage. Criticising the international community’s criminal silence over the genocide of Muslims of Myanmar, he said that the international community had been quite partisan and silent over the broad day light genocide of the Muslims, which was a sheer manifest of double standard ... continue reading >>>>
Visit: http://freebookpark.blogspot.com

Monday, August 6, 2012

Ramadan, Fasting in Islam



Islam is based on the following five (principles), which are also the forms of worship; the first two (Shahada & Salah) are daily, next two (Zakat & Saum) are annual and the last Hajj (Pilgrimage to Makka)  is once in life:- 1.   To testify (Shahada) that none has the right to be worshipped but Allah and Muhammad(peace … Continue reading »

Visit: http://freebookpark.blogspot.com